SHARE
FIH put an end to the disciplinary case opposing hockey’s world governing body to PHF

Pakistan has reached an agreement with the International Hockey Federation (FIH) according to which the former Olympic and World champions have been allowed to compete for a place in the 2020 Tokyo Olympics. At the same time, the fine imposed on Pakistan for pulling out of FIH Pro League has been reduced to considerable level. Argentina and Holland have withdrawn their compensation case against Pakistan reducing the total amount of the fine to 25 percent. Furthermore the FIH has also allowed Pakistan Hockey Federation (FIH) to invest the rest of half amount of the fine on grassroots hockey development in Pakistan and share the progress with Asian Hockey Federation (AHF).
The rest of the half fine would be paid to FIH in installments with first installment to be paid on or before August 19, 2019. Pakistan will have to pay the first installment of fine to compete in the Olympic qualifying matches most probably to be held in September.
The PHF President Brig (rtd) Khalid Sajjad Khokhar who along with FIH legal counsel Majid Bashir pleaded the case with FIH Disciplinary Commission in Switzerland Tuesday thanked FIH CEO Thierry Weil for amicable settlement that would now allow Pakistan not only to compete in Olympic Qualification round but also to investment part of the fine back home on development programmes at grassroots level.

 

انٹرنیشنل ہاکی میں پاکستان کی اس اہم ترین کامیابی کو حاصل کرنے کے بعد سربراہ پاکستان ہاکی فیڈریشن برگیڈیئررخالد سجاد کھوکھر نے حکومت پاکستان اور قوم کو مبارکبادپیش کی ہے. لوزین میں ہونے والے انٹرنیشنل ہاکی فیڈریشن کے ڈسپلنری کمیشن اجلاس کے بعد اپنے ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ یہ پاکستان اور پاکستان ہاکی کے لئے ایم کامیابی ہے. انہوں نے کہا کہ انٹرنیشنل ہاکی فیڈریشن کے ساتھ معاہدہ بھی دستخط کرلیا ہے، انہوں نے کہا کہ یہ ہمارے لئے ایک المیہ تھا کہ انٹرنیشنل ہاکی کے دروازے پاکستان پر بند ہورہے تھے لیکن اللہ پاک کے فضل و کرم سے انتھک محنتیں اور کاوشیں رنگ لائیں اور ہم پاکستان ہاکی کا مقدمہ جیتنے میں کامیاب ہوسکے.انہوں نے کہا کہ ڈسپلنری کمشنر نے پاکستان ہاکی فیڈریشن کی جانب سے کی گئی اپیل ،کمنٹس اور جوابات کو انتہائی مدلل قرار دیا. صدر ہاکی فیڈریشن برگیڈیئررخالد سجاد کھوکھر نے بتایا کہ جرمانہ کی رقم کو 75فیصد معاف کرالیا ہے جوکہ 25 فیصد آسان اقساط میں جمع کرانا ہونگے. انہوں نے کہا کہ پاکستان ہاکی کے حق میں ارجنٹائن اور ہالینڈ نے اپنے کلیم دستبردار کرلئے ہیں جبکہ نیوزی لینڈ کے ساتھ خط و کتابت جاری ہے جو کہ امید ہے کہ اس کا مثبت حل نکل آئے گا.
صدر ہاکی فیڈریشن برگیڈیئر ر خالد سجاد کھوکھر نے اپنے بیغام میں کہا ہے کہ انٹرنیشنل ہاکی فیڈریشن کی جانب سے پاکستان پر عائد پابندی کا خاتمہ کردیا گیا ہے.25 فیصد جرمانہ کی رقم کی قسط کی ادائیگی کے ساتھ ہی پاکستان کو اولمپکس کوالیفائنگ راؤنڈ میں حصہ لینے کی اجازت مل گئی ہے. انہوں نے کہا کہ یہ پاکستان اور پاکستان ہاکی کی بہت بڑی کامیابی ہے اور بطور صدر ہاکی فیڈریشن میں نے بھرپور کوشش کی ہے کہ پاکستان ہاکی کا انٹرنیشنل ہاکی نام روشن ہو ، انہوں نے کہا کہ میں پرامید ہوں کہ مستقبل میں پاکستان کو بڑی کامیابی نصیب ہوگی. انہوں نے کہا کہ اعتماد پر پاکستان حکومت اور قوم کا مشکور ہوں اور عزم کا اظہار کیا کہ پاکستان ہاکی کے لئے ہماری مخلص کاوشیں جاری رہیں گی اور ہم پاکستان کو کسی بھی صورت شرمندہ نہیں ہونے دینگے اور اس سلسلہ میں حکومت پاکستان کے تعاون کا یقین ہے.